صفحہ اول > سوالات/جوابات > عبادات ومعاملات > بیوی کا ہاتھ پکڑ کر بازار جانا

بیوی کا ہاتھ پکڑ کر بازار جانا

سوال:

اکثر دیکھا جاتا ہے کہ میاں بیوی جب بازار جاتے ہیں تو انہوں نے ایک دوسرے کا ہاتھ پکڑا ہوتا ہے، کیا برسر عام بیوی کا ہاتھ پکڑ کر چلنا جائز ہے؟

جواب:

میاں بیوی کا بازار میں ایک دوسرے کا ہاتھ پکڑ کر گھومنا پھرنا انسانی وقار کے خلاف اور لوگوں کے سامنے بے شرمی اور بے حیائی کا اظہار ہے۔ اسلامی تہذیب میں ایسا کرنا درست نہیں بلکہ یہ مغربی تہذیب ہے کہ وہ برسر

عام ایک دوسرے کو بوس و کنار کرتے ہیں جبکہ اسلام اسے بے حیائی اور بے شرمی قرار دیتا ہے۔ محبت کے اظہار کیلئے اور بہت سے طریقے ہیں، جب انہیں خلوت ملے تو محبت کا اس انداز سے اظہار سے کیا جا سکتا ہے۔

ہاں اگر عورت بیمار یا نابینا ہے تو اس کا ہاتھ پکڑا جا سکتا ہے۔ اسی طرح بوقت ضرورت بیوی اپنے خاوند کا ہاتھ بھی پکڑ سکتی ہے لیکن اظہار محبت کیلئے برسر عام ایک دوسرے کا ہاتھ پکڑ کر چلنا انسانی شرف و وقار اور

اسلامی روایات کے خلاف ہے، اس سے اجتناب کرنا چاہیے۔ (واللہ اعلم)

4 comments

  1. subhanallah

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*